• Tuesday, December 11, 2018

Panama Case - Post Verdict Discussion and Updates

Discussion in 'Pakistani Siasat' started by Arsalan, Aug 2, 2017.

  1. Path-Finder

    Path-Finder ELITE MEMBER

    Messages:
    11,704
    Joined:
    Feb 7, 2013
    Ratings:
    +3 / 14,015 / -7
    Country:
    Pakistan
    Location:
    United Kingdom
    Yes, Thank you.
     
    • Thanks Thanks x 1
  2. Farah Sohail

    Farah Sohail SENIOR MEMBER

    Messages:
    7,116
    Joined:
    Mar 2, 2012
    Ratings:
    +4 / 6,644 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan

    قیدیوں کی ایکٹنگ کر رہا تھا، نہال ہاشمی


    سپریم کورٹ میں نہال ہاشمی کی گالیاں دینے والی ویڈیو پر لیے گئے نوٹس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا ہے کہ ہاشمی کا وکالت کا لائسنس منسوخ کیا جا سکتا ہے ۔

    نہال ہاشمی نے کہا کہ وکالت ہی میرا پیشہ اور ذریعہ معاش ہے، لائسنس منسوخ ہوا تو بچے بھوکے مر جائیں گے _ چیف جسٹس نے کہا کہ جن کے لیے گالیاں دیتے ہیں وہ آپ کو دیں گے ۔

    پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق سپریم کورٹ نے نہال ہاشمی کو ایک مرتبہ پھر توہین عدالت کا نوٹس جاری کر دیا ہے ۔ اور تین روز میں جواب جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت پیر بارہ مارچ تک ملتوی کر دی ہے ۔

    اس سے قبل سماعت کے آغاز پر توہین آمیز تقریر پر لیے گئے نوٹس کے مقدمے کا نمبر پکارا گیا تو نہال ہاشمی روسٹرم پر آئے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے نہال ہاشمی کی ججوں کو گالیاں دینے والی ویڈیو پراجیکٹر پر چلانے کی ہدایت کی ۔ توہین آمیز انداز اور گالیوں والے بیان کی ویڈیو کو دو مرتبہ کمرہ عدالت میں چلایا گیا ۔

    نہال ہاشمی نے کہا عدالت کے سامنے شرمندہ ہوں، یہ جیل میں جو لوگ تھے ان کی ایکٹنگ کر رہا تھا، ذہنی طور پر پریشان ہوں، بابا رحتمے کون ہے مجھے نہیں پتہ ۔ چیف جسٹس نے نہال ہاشمی کی ویڈیو دیکھ کر ان کے گالیوں والے الفاظ دہرائے تو ایک سینئر صحافی نوٹس لے رہے تھے، چیف جسٹس نے ان کو مخاطب کر کے کہا کہ مطیع جان ‘ ہم اس صورتحال کو ڈی فیوز کرنا چاہتے ہیں، اس میں مدد کریں ۔

    پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق اس دوران نہال ہاشمی کے وکیل کامران مرتضی نے کہا کہ وہ اس مقدمہ میں نہال ہاشمی کی طرف سے جمع کرایا گیا وکالت نامہ واپس لیتے ہیں ۔ چیف جسٹس نے نہال ہاشمی کو مخاطب کر کے کہا کہ اپنے لیے اچھا سا وکیل ڈھونڈ کر لائیں ۔نہال ہاشمی نے کہا کہ آئندہ کبھی ایسی باتیں نہیں کروں گا ۔

    جسٹس اعجازالحسن نے کہا آپ لوگوں نے یہ وطیرہ بنا لیا ہے ۔ جسٹس عمر عطابندیال نے پوچھا کیا آپ ایکٹر ہیں۔ نہال ہاشمی نے استدعا کی نوٹس جاری نہ کیا جائے، خاندان برباد ہو جائے گا، میرے بچے مر جائیں گے ۔

    چیف جسٹس نے کہا کہ یہ پہلے سوچنا چاہیے تھا، جن کے لیے آپ گالیاں دیتے ہیں وہ کوئی اور بندوبست کر دیں گے ۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ میں مڈل کلاس آدمی ہوں، میرے پاس ایک چونی بھی نہیں ہے ۔ پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق نہال ہاشمی نے کہا کہ میں دکھ میں ہائپر ہو جاتا ہوں ۔ چیف جسٹس نے پوچھا کہ کیا آپ ہمیں دیکھ کر ہائپر ہوگئے؟

    اس بات پر کمرہ عدالت میں قہقہے گونج اٹھے ۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ قیدی مجھ سے زیادہ حکومت اور نظام کو برا بھلا کہتے تھے، شدید ذہنی دبائو کا شکار تھا ۔ نہال ہاشمی بار بار معافی مانگتے ہوئے کہتے رہے کہ میں وکالت کے بغیر خود سے بجلی کا بل تک جمع نہیں کروا سکتا ۔

    چیف جسٹس نے کہا کہ ہم کل وکلا کی تنظمیوں کے نمائندوں کو بلا لیتے ہیں ۔ پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق اس کے بعد عدالت نے حکم نامہ لکھوانا شروع کیا تو وکیل کامران مرتضی نے کہا کہ میری درخواست ہے گالیوں والے الفاظ عدالتی حکم کا حصہ نہ بنائے جائیں، ہمیں خود اس پر شرمندگی ہے ۔

    چیف جسٹس نے کہا کہ کیا کریں جب نوٹس دینا ہے تو اس میں واقعہ اور الفاظ تو لکھیں گے جس کا جواب ان کو دینا ہے ۔ جو بھی ہے آپ سب وکیل ہیں، آپس میں بار والے مل کر فیصلہ کر لیں، اس ادارے کو آنے طاقت دینی ہے، آپ نے اس ادارے کو بچانا ہے ۔

    پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق نہال ہاشمی نے کہا کہ رہائی کے وقت ذہنی طور پر ٹھیک نہیں تھا، ایک موقع دے دیں، مہلت دے دیں ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپ تقریریں تو بڑی اچھی کرتے رہے ۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ میں آپ کا وکیل ہوں، میں عدلیہ بحالی کیلئے جیل گیا ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ہمارا وہ وکیل نہیں جو گالیاں دے، عدلیہ بحالی کیلئے جیل جانے کا یہ احسان کب تک ہم اٹھاتے رہیں گے ۔

    سپریم کورٹ نے پاکستان بار کونسل اور صوبائی بار کونسلز کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کیا ۔ پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق عدالت نے نہال ہاشمی کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کرتے ہوئے پیر تک سماعت ملتوی کی اور ہدایت کی کہ تحریری طور پر جواب جمع کرائیں ۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ سر، میں کھاؤں گا کیسے، سر پلیز سر ۔ میرے بچے ہیں سر ۔

    عدالت نے ایڈووکیٹ کامران مرتضیٰ کو وکالت نامہ واپس لینے کی اجازت دے دی ۔ نہال ہاشمی نے کہا کہ اللہ کیلئے معاف کر دیں تو جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ یہی کچھ اپنے جواب میں لکھ دیں ۔ معافی اللہ سے جا کر مانگیں ۔

    ------
    :rofl::rofl::rofl::rofl::rofl::rofl:
     
    Last edited: Mar 7, 2018
    • Thanks Thanks x 2
  3. Shane

    Shane SENIOR MEMBER

    Messages:
    3,678
    Joined:
    Sep 2, 2007
    Ratings:
    +2 / 5,005 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    Thank you for the tag and sorry to keep postponing a reply since your earlier post asking for an update. Nice of you to gauge our thoughts on the matter.

    My thoughts are along the lines of the following posted in detail earlier:
    In short, I think the Judiciary has been hard done by the lack of political activity of PTI against PMLN.

    Just merely repeating that we stand with the Judiciary just doesn't cut it when you are acting as if judiciary is fighting your fight for you and you don't need to do much else than provide lip service that is actually making both PTI and Judiciary look suspicious.

    On the role of Military Establishment, I'd like to agree with @PakSword about protecting the Judiciary and letting it play its part without pressure.

    I hope the Judiciary is continued to be assured of protection and otherwise left alone to steer the high profile accountability cases across the board to their conclusion.

    I have just one point of contention with establishment. It is not fair to stay neutral in General Elections.

    Establishment has to wash off the dirt of letting PMLN get elected with two thirds majority in 2013 elections...the management of Punjab constituencies where PTI was going to win if not overlooked to let them be tempered with is not mere heresy...

    The support in the earlier elections from 88-96 may be justified as something to do with national security but not 2013...

    The help in elections from 88-96 was the pivotal factor that established PMLN and Nawaz Sharifs political clout.

    Just walking away and staying neutral in next elections shall not be enough to revoke the effects of creating and strengthening a political monstrosity like the brothers Sharif and their crooked family along with Zardari and his crooniesi that have economically put PAKISTAN ON ITS KNEES.
     
    • Thanks Thanks x 6
  4. Farah Sohail

    Farah Sohail SENIOR MEMBER

    Messages:
    7,116
    Joined:
    Mar 2, 2012
    Ratings:
    +4 / 6,644 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    شاہد مسعود کے پروگرام پر نیوز ون کو نوٹس

    سپریم کورٹ نے ڈاکٹر شاہد مسعود کے پروگرام پر نیوز ون ٹی وی چینل کو نوٹس جاری کیا ہے ۔ عدالت نے چینل انتظامیہ اور اینکر پرسن ڈاکٹر شاہد مسعود کو تین دن میں جواب دینے کی مہلت دی ہے ۔

    سماعت کے آغاز پر چیف جسٹس نے کہاکہ انکوائری کمیٹی کی رپورٹ آ چکی ہے، شاہ خاور صاحب، آپ ڈاکٹر شاہد کی نمائندگی کر رہے ہیں؟۔ رپورٹ آگئی ہے، بظاہر یہی کہہ رہی ہے کہ آپ کی بات درست نہیں ہے۔ چیف جسٹس نے شاہد مسعود کو مخاطب کرکے کہا کہ پروگرام کی سی ڈی دوبارہ دیکھی، بار بار کہہ رہے ہیں کہ چیف جسٹس نوٹس لیں، اگر میں نے غلط کی ہے تو فلاں فلاں ادارے مجھے پھانسی دیدیں۔ پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق چیف جسٹس نے کہاکہ آپ نے کہا تھا کہ ملزم کو مارا جاسکتا ہے۔ ہم نے سمجھا کہ یہ بات اگر سچ ہے تو ممکن ہے کہ ملزم کی زندگی کو خطرہ ہو، اس لیے اس کی سیکورٹی کا حکم دیا۔ یہ سب کچھ وہ تھا جوآپ کافرمان تھا، یا پروگرام تھا۔

    چیف جسٹس نے کہاکہ اس کے بعد نوٹس لے کر آپ کو یہاں بلالیا، یہاں عدالت میں بھی آپ اپنی بات پر قائم رہے، یہاں سے باہر جاکر بھی آپ نے وہی بات کی۔پھر ہم نے لاہور میں مقدمہ لگایا ، وہاں بھی سب کو بلایا ،آپ اپنی بات پر قائم رہے، باقی لوگوں کی دورائے سامنے آئیں، کچھ کا خیال تھاکہ یہ سچ پر مبنی نہیں اور غلطی تسلیم کرکے معافی مانگ لیں، جبکہ کچھ نے کہاکہ جے آئی ٹی بنائی جائے۔

    پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق چیف جسٹس نے کہاکہ وہ کمیٹی بنائی ، اب تحقیقاتی رپورٹ آگئی ہے اس پر اپنا تحریری جواب دیں۔ چیف جسٹس نے وکیل شاہ خاور کو مخاطب کرکے کہاکہ اگراس طرح کی صورتحال توکیا کیاجاسکتاہے۔وکیل شاہ خاور نے کہاکہ ابھی رپورٹ نہیں ملی، مل جائے تو جو مناسب ہوا، وہی کروں گا۔

    چیف جسٹس نے کہاکہ اس پر جواب دیدیں۔ وکیل نے کہاکہ پروگرام کا بنیادی تھیم کچھ اس طرح تھاکہ چونکہ سرگودھا میں بھی ایسا واقعہ ہواتھا، اور انٹرپول نے پاکستان کی پولیس کو اس کی معلومات دیں تو کارروائی ہوئی۔ یہ عالمی گروہ ہے اس لیے اس کی تفتیش کیلئے کہا۔

    چیف جسٹس نے کہاکہ اس بات کو مختصرکرلوں، رپورٹ کی ایک نقل آپ کو دیتے ہیں،جواب دیتے ہوئے یہ ذہن میں رکھیے گا کہ اس کے قانونی مضمرات ہوں گے۔ پاکستان 24 کے نامہ نگار کے مطابق وکیل نے کہاکہ ہم یہ نہیں کہتے کہ معافی نہیں مانگیں گے۔ چیف جسٹس نے کہاکہ اب معافی کا وقت نکل چکا ہے، لاہور میں حامد میر نے بھی پوچھا تھا۔ چیف جسٹس نے ڈاکٹر شاہد کو مخاطب کرکے کہاکہ آپ سے پوچھاتھا، اب آپ لکھ کرجواب دیدیں، ہم اس وقت یہ نہیں کہہ رہے ابھی بتائیں۔

    پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق عدالت نے حکم نامہ لکھوانا شروع کیا تو شاہدمسعود یہ انتہائی اہم اور فوری نوعیت کا معاملہ ہے ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ چلیں آپ پھر جواب جمع کرا دیں، ہم کل ہی سن لیتے ہیں۔ شاہد مسعود نے اپنے ہاتھ میں پکڑی فائل میں سے کچھ صفحات نکال کر عدالتی معاون کے ذریعے ججوں کی جانب بڑھاتے ہوئے کہاکہ آج صبح ہی ڈارک ویب پر گیا ہوں، ان آخری چارصفحات کو دیکھ لیں، آج صبح ہی بارہ سے چودہ سال کی بچیوں کی ویڈیوز اپلوڈ ہوئی ہیں۔

    چیف جسٹس نے کہاکہ یہ غیرمتعلقہ چیزہے، ہم نے آپ کے پروگرام ، اور انکوائری رپورٹ پر آپ کے جواب کو دیکھناہے، صرف اس حد تک ہی رہیں گے۔ پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق شاہد مسعود نے کہاکہ ایف آئی اے کے پاس ڈارک ویب کے مواد کو پکڑنے کا سامان موجود نہیں ہے، وہاں سے ڈیٹا ڈیلیٹ کردیا جاتا ہے۔ جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ آپ ڈاؤن لوڈ کرلیتے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپ اپنے پروگرام کو دوبارہ جاکر دیکھ لیں۔ آج آپ نے ایک اور چانس ضائع کر دیا ہے۔

    پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق شاہد مسعود نے کہاکہ میں معافی مانگ لیتاہوں۔ چیف جسٹس نے کہاکہ معافی مانگنے کاوقت نکل گیاہے، اب صرف معافی سے کام نہیں چلے گا۔ وکیل شاہ خاور نے کچھ کہنا چاہاتو چیف جسٹس نے کہاکہ پہلے مانیں کہ غلطی ہوئی ہے اس کے بعد ہم دیکھیں گے۔ ہم دیکھیں گے کہ آپ نے سچ کہا تھا، یا مبالغہ آرائی کی تھی ۔ وکیل شاہ خاور نے کہاکہ ان (شاہد مسعود) ا س کے قانونی مضمرات کا علم نہیں تھا۔ شاہد مسعود نے دوبارہ کہاکہ ایف آئی اے کے پاس سسٹم نہیں ہے۔ چیف جسٹس نے کہاکہ نہیں ہے تو آپ رہنے دیں۔

    چیف جسٹس نے کہاکہ آپ کے چینل کو بھی نوٹس کرتے ہیں، کون سا میڈیاگروپ اور چینل ہے آپ کا؟۔ پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق شاہد مسعود نے کہاکہ نیوز ون ۔ سپریم کورٹ نے نیوز ون ٹی وی کی انتظامیہ کو بھی ڈاکٹر شاہد کے پروگرام پر نوٹس جاری کیا۔ چیف جسٹس نے کہاکہ اس انکوائری رپورٹ پر جواب دیں۔ اگر اسلام آباد میں ہوتا تو ہفتے کے روز ہی سن لیتے مگر لاہور میں ہوں گے۔ ہفتے کے دن تک جواب جمع کرائیں، پیر بارہ مارچ کو مقدمے کی سماعت کریں گے۔
    پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق ڈاکٹر شاہد نے کہاکہ میں اپنا مقدمہ واپس لے لیتاہوں۔ چیف جسٹس نے کہاکہ اب دود ھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوگا، انصاف ہوگا اور نظرآئے گا۔

    اس سے قبل صبح ساڑھے نوبجے سے کمرہ عدالت میں موجود شاہد مسعود نے ٹی وی چینلوں کے دیگر اینکروں کو اپنے ہاتھ میں پکڑے کالے فائل کور میں سے کچھ دستاویزات بھی دکھائیں۔ پاکستان 24کے نامہ نگار کے مطابق جب گیارہ بجے عدالت میں وقفہ ہوا تو شاہد مسعود نے اسی وقت کمرہ عدالت میں آنے والے دنیا ٹی وی کے مالک میاں عامر محمود کی نشست پر گئے اور ان کے گھٹنوں کو ہاتھ لگایا۔ میاں عامر اپنی نشست سے اٹھ گئے۔ ڈاکٹر شاہد نے اپنے ہاتھ میں پکڑی فائل میں سے کچھ کاغذات ان کو دکھائے اور دس منٹ تک ان کے ساتھ گفتگو کرتے رہے۔
    یاد رہے کہ لاہور میں اسی کیس کی سماعت کے دوران ڈاکٹر شاہد مسعود نے میاں عامر پر پھبتی کسی تھی کہ آپ پنجاب کے وزیراعلی بننے والے ہیں مبارک ہو۔ جس کے جواب میں انہوں نے لعنت بھیجی تھی۔
     
  5. Verve

    Verve SENIOR MEMBER

    Messages:
    6,196
    Joined:
    May 15, 2014
    Ratings:
    +1 / 6,295 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    United Kingdom
    why is CJP not interested in the crime that's being pointed out right in his face? JIT was provided this evidence of red rooms with Pak children videos in them as well then what have they done about it?

    Wow ... if CJP actually said that!
     
  6. Farah Sohail

    Farah Sohail SENIOR MEMBER

    Messages:
    7,116
    Joined:
    Mar 2, 2012
    Ratings:
    +4 / 6,644 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    Actually CJ was concerned here abt tihs particular case... because Shahid Masood had in his program alleged....tht this person Imran Ali has 37 foreign bank accounts..and he is part of a big foreeign network...and I can prove that.. he even accused a federal minister of having links with Imran Ali, and foreign network.. shahid Masood said tht if i am proven wrong...judges can hang me..but I have all the proofs..and CJ must take notice.,
    When CJ called him first time..Shahid Masood kept on insisting tht this person Imran Ali has 37 bank accounts and one federal minister is also involved.. CJ kept on asking him.ltht are you sure what u are saying? And if u are proven wrong..it can have egal consequences.. do u want to apologise....if you are not sure abt yourclaims? If you are proven wrong...then it means you spread sensationalism ...you wasted court's time..so please think before u say anything.. but he kept insisting...
    A JIT was formed ...Shahid Masood said tht I am not satisfied with this JIT... CJ then formed another JIT...

    ..i dont know..if you watched that program of Shahid Masood..or not...but I watched it... and Shahid Masood was clearly talking abt this particular case only...Imran Ali..Zainab's murderer..tht I have proofs against him...and CJ must take notice..

    Shahid Masood in ihs first program didnt generalise this issue..but was talking abt Imran Ali particularly.. now when so much time has been wasted by Shahid Masood...and he couldnt prove his claims...now he is saying tht tht this crime exists and theres dark web amd foreign gangs..

    CJ is rightly irritated on Shahid Masood and i can sense tht Shahid Masood is in deep trouble... if Shahid Masood had talked abt this problem generally..it would have been ok..but just when Imran Ali was arrested, Shahid Masood sensationalised this issue tht he has 37 bank accounts..and part of foreign network and one minister is involved and i have all the proofs..

    Shahid Masood had the opportunity to apologise in SC..on first hearing but he kept insisting...and now he has no proofs ...

    No one is denying tht this problem/crime/mafia doesnt exist...but why did Shaihd Masood sensationalise the whole issue...when Imran Ali was arrested?

    Shahid Masood has changed so many statements in this case..that he has lost total credibility.. I think Shahid Masood should have apologised on first hearing if he didnt have proofs in this particular case..

    And now he is saying tht aisa hota waisa hota hai.. CJ is rightly irritated and asking him to stick to his earlier claims and proof them/give his reply on FIA inquiry report..dont do idhar udhar ki baatein
     
    • Thanks Thanks x 2
  7. PakSword

    PakSword ELITE MEMBER

    Messages:
    10,727
    Joined:
    Dec 6, 2015
    Ratings:
    +4 / 12,650 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    United Arab Emirates
    Not impressed at all.. when is SC issuing notice to NS and his sister? Or if there is any hikmat, when is SC ordering a ban on broadcasting of their speeches?
     
    • Thanks Thanks x 2
  8. Verve

    Verve SENIOR MEMBER

    Messages:
    6,196
    Joined:
    May 15, 2014
    Ratings:
    +1 / 6,295 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    United Kingdom
    Have you seen the full JIT report?

    A lot of the news coming out of courts is twisted in many ways.
     
  9. Shane

    Shane SENIOR MEMBER

    Messages:
    3,678
    Joined:
    Sep 2, 2007
    Ratings:
    +2 / 5,005 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    @PakSword you rightly predicted at the time of Shahid Masood's sensational vid was posted by myself that this is another one of his false claims.

    I fortunately, was not head over heals supporting the guy but the way Dr Shahid threw the guantlet, challenging CJP to take notice... the CJP, had little choice but to warrant an investigation because of Dr's claim that he be hanged if proven wrong.


    Another case of NADAN DOST SAY AQALMAND DUSHMAN BHALA.
    CJ has little choice but to hold the good Dr. responsble for his false statements.

    Whatever Dr shahid is saying since the JIT report is generalizing the issue...

    Even FIA doesn't deny the general issue of child molestation rackets, child **** rings, and their links with dark web.

    The issue is that the Dr. made specific allegations in his original claims about 37 accounts and involvement of a Federal minister.

    DONT FORGET AND CORRECT ME IF I'M WRONG!!! What went on in Kasur other than what Imran Ali did is still unaccounted for since many many years.

    1) The media was highlighting earlier that there were 4 other minor girl molestation and murder victims other than those 8 killed by Imran Ali.

    2) The Kasur Child Video molestation case with the child molestation accused getting bails and some even getting away without punishment due to their influence, out of the few in custody...

    Those are the crime that still needs to be accounted for instead of brushing everything under the carpet blaming Dr.Shahid for some of his false claims.
     
    • Thanks Thanks x 4
  10. Shane

    Shane SENIOR MEMBER

    Messages:
    3,678
    Joined:
    Sep 2, 2007
    Ratings:
    +2 / 5,005 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    After what happened in court as posted by @Farah Sohail , a sample of what happened outside:
     
    • Thanks Thanks x 1
  11. Shane

    Shane SENIOR MEMBER

    Messages:
    3,678
    Joined:
    Sep 2, 2007
    Ratings:
    +2 / 5,005 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    THE EXPRESS TRIBUNE > PAKISTAN
    SC takes suo motu notice of delay in accountability judge’s reappointment
    By Hasnaat Mailk
    Published: March 7, 2018
    57SHARES
    SHARE TWEET
    [​IMG]
    Justice. PHOTO: AFP

    ISLAMABAD: The Supreme Court (SC) has taken suo motu notice of the delay in reappointment of an accountability court judge, who is hearing the Panamagate case against Sharif family.

    A three-member bench headed by Chief Justice of Pakistan (CJP) Mian Saqib Nisar, heard on Wednesday an application pertaining to extension in tenure of accountability court judge Muhammad Bashir.

    Justice Nisar observed the Islamabad High Court (IHC) had already recommended Bashir’s appointment but the government was yet to take action.

    After being summoned to appear before the top court earlier in the day, the law secretary informed SC that the matter of reappointment of the judge was currently with the Prime Minister Secretariat. He added that the extention will be approved in the next couple of days.

    The court has adjourned hearing until March 12.


    The Supreme Court on Wednesday extended for two months the deadline for the accountability court hearing three references against the Sharif family.

    The three-judge bench, headed by Justice Ejaz Afzal Khan and comprising by Justice Azmat Saeed Sheikh and Justice Ijazul Ahsan took up the pleas, filed by NAB and the accountability court judge.

    The court also extended three months’ time to conclude trial in the assets case against former finance minister Ishaq Dar.
     
    Last edited: Mar 8, 2018
  12. PakSword

    PakSword ELITE MEMBER

    Messages:
    10,727
    Joined:
    Dec 6, 2015
    Ratings:
    +4 / 12,650 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    United Arab Emirates
    Until Bajwa is incharge, security is assured.. after that, no one knows..
     
  13. Strike!

    Strike! FULL MEMBER

    Messages:
    384
    Joined:
    Jul 10, 2017
    Ratings:
    +0 / 355 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Saudi Arabia


    Lohay ke chanaaaaaayyyyyyyyyy!!
     
    • Thanks Thanks x 2
  14. Shane

    Shane SENIOR MEMBER

    Messages:
    3,678
    Joined:
    Sep 2, 2007
    Ratings:
    +2 / 5,005 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Pakistan
    COAS General Qamar Javed Bajwa, is scheduled to retire on 29th of Nov 2019.

    The next CJP in Line after Justice Nisar is Justice Khosa.

    Neither the president nor the prime minister or any other State institution has any role whatsoever in the appointment of the Supreme Court chief justice. It was conclusively decided by the apex court itself once and for all long time ago that any judge, who was the senior most after the chief justice, would get this office after the retirement of the incumbent top judge. The issuance of notification of the appointment of the chief justice by the president is just a formality.

    Following the retirement of Justice Saqib Nisar on January 18, 2019, Justice Khosa will be named as the chief justice to hold this coveted slot for some eleven months till Dec 12, 2019.

    That's why I posted some time ago that the Sharifs predicament is to not just find a way to remove the above but also find another Gen Butt and Justice SaeduzZaman at the same time.
     
    • Thanks Thanks x 1
  15. Strike!

    Strike! FULL MEMBER

    Messages:
    384
    Joined:
    Jul 10, 2017
    Ratings:
    +0 / 355 / -0
    Country:
    Pakistan
    Location:
    Saudi Arabia
     
    • Thanks Thanks x 1